آسٹریلیائی ٹیم کی بس پر پتھر مارنے پر کرکٹ آسٹریلیا کا اظہار ناراضگی،ہندوستان بھی شرمسار

گوہاٹی: (یو این آئی) ہندوستان کو آسٹریلیا کے خلاف دوسرا ٹی 20 میچ بری طرح ہارنے کے بعد اس وقت شرمسار ہونا پڑ گیا جب آسٹریلیائی کرکٹ ٹیم کی بس پر کچھ نامعلوم افراد نے پتھر پھینکے جس سے مہمان ٹیم کی بس کی کھڑکیوں کے شیشے ٹوٹ گئے۔ مرکزی وزیر کھیل راجیہ وردھن سنگھ راٹھور نے کہا کہ اس قسم کے واقعات ہمارے سلامتی اقدامات کے مظہر نہیں ہیں۔
دوسری جانب کرکٹ آسٹریلیا (سی اے) نے بھی اس واقعہ پرناراضگی کا اظہار کیا ہے۔ بورڈ نے اپنی ویب سائٹ پر اس واقعہ کا ذکر کرتے ہوئے لکھا ”ہمیں لگتا ہے کہ بس پر پھینکا گیا پتھر گیند کے سائز جتنا بڑا تھا اور وہ بس کے اندر آکر گرا“ واضح رہے کہ ہندستان اور آسٹریلیا کے درمیان دوسرا میچ منگل کی رات برساپاڑہ اسٹیڈیم میں کھیلا گیا تھا۔
اس میچ میں ہندستانی ٹیم کو آٹھ وکٹوں سے شکست ہوئی اور تین میچوں کی سیریز 1-1 سے برابر ہوگئی تھی۔ اس میچ کے بعد جب آسٹریلیائی ٹیم اپنے ہوٹل ریڈیسن بلیو واپس لوٹ رہی تھی کہ تبھی کچھ لوگوں نے ان کی بس پر پتھر پھینکے جس سے بس کے دائیں جانب کی کھڑکیوں کے شیشے ٹوٹ گئے۔
آسٹریلیائی کرکٹر آرون فنچ نے سوشل میڈیا پر اس واقعہ کی سخت مذمت کرتے ہوئے سوشل سائٹ پر ایک تصویر پوسٹ کی جس میں ٹیم کی بس پر ہوئے حملے کے بعد ٹوٹی ہوئی کھڑکی کو بھی دیکھا جا سکتا ہے۔ انہوں نے تصویر کے ساتھ لکھا ”یہ بہت خوفناک واقعہ تھا۔ ہم جب اسٹیڈیم سے ہوٹل واپس آرہے تھے تب ٹیم کی بس پر کسی نے پتھر پھینکا جس سے کھڑکی کا شیشہ تک ٹوٹ گیا۔

Title: attack on aussie team bus not reflective of our security measures sports minister says | In Category: کھیل  ( sports )